اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

پیپکو نے اپنے ملازمین کی تنخواہوں میں 50 فیصد اضافے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا:
اسلام آباد(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔20 جولائی۔2010ء) پاکستان الیکٹرک پاور کمپنی لمیٹڈ (پیپکو) نے وفاقی حکومت کے اعلان کے مطابق فنانس ڈویژن (ریگولیشن ونگ)حکومت پاکستان،کے میمورنڈم کو اختیار کرتے ہوئے اپنے ادارے کے ملازمین کی تنخواہوں میں پچاس فیصد اضافے کا نوٹیفکیشن گذشتہ روز جاری کر دیا ہے۔اس کے علاوہ گریڈ ایک تا پندرہ کے ملازمین کے میڈیکل الاؤنس میں سو فیصد اضافے کا ایک الگ میمورنڈم بھی جاری کر دیا گیا ہے ۔جنرل منیجر (ہیومن ریسورسز) پیپکو کے دفتر سے جاری کردہ آفس میمورنڈم کے مطابق موجودہ بنیادی تنخواہ کے پچاس فیصد کی شرح سے ایڈہاک الاؤنس2010 کا اطلاق پیپکواور اس کے ذیلی اداروں بشمولملحقہ پاور ونگ آفسز،ڈسٹری بیوشن کمپنیوں،جنریشن کمپنیوں اور این ٹی ڈی سی کے تمام ملازمین پر ہو گا۔جبکہ بنیادی پے اسکیل ایک تا پندرہ کے ملازمین کا میڈیکل الاؤنس دُگنا کر دیا گیا ہے۔دونوں اضافوں کا اطلاق یکم جولائی2010سے ہو گا ۔ دریں اثناء پاکستان واپڈا ہائیڈرو الیکٹرک سنٹرل لیبر یونین (سی بی اے) کے ریجنل سیکرٹری انفارمیشن سجاد حسین ساجد نے آئیسکو سمیت تمام ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کے ملازمین کی تنخواہوں اور میڈیکل الاؤنس میں اضافے کا نوٹیفکیشن بروقت جاری کرنے کا خیر مقدم کرتے ہوئے پیپکو اتھارٹی کا شکریہ ادا کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی جانب سے تنخواہوں میں اضافے اور دیگر مراعات سے تنخواہ دار طبقے کو خاطر خواہ ریلیف حاصل ہو گااور وہ زیادہ محنت ، جانفشانی اور سکون قلب سے اپنے فرائض انجام دیں گے جس سے ان کی کارکردگی اور استعداد کار میں اضافہ ہو گا۔

20/07/2010 19:38:49 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے