اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

وزارت پانی و بجلی ملک بھر میں 32 چھوٹے ڈیم تعمیر کرے گی جس کے بعد بجلی کا بحران ختم ہوجائیگا ،راجہ پرویز اشرف، حکومت نے ایک سال کے دوران بجلی کی پیداوار میں 900 میگا واٹ کا اضافہ کیا، ملک کو روشن اور صاف و شفاف بنانے کے عزم پر گامزن ہیں،قصور میں بلوکی پاور پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب:
قصور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17جولائی۔2010ء) وفاقی وزیر پانی و بجلی راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ وزارت پانی و بجلی ملک بھر میں 32 چھوٹے ڈیم تعمیر کرے گی جس کے بعد بجلی کا بحران ختم ہوجائیگا ، حکومت نے ایک سال کے دوران بجلی کی پیداوار میں 900 میگا واٹ کا اضافہ کیا، ملک کو روشن اور صاف و شفاف بنانے کے عزم پر گامزن ہیں ۔قصور میں بلوکی پاور پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کو بجلی کا بحران ورثے میں ملا ہے جس سے نمٹنے کیلئے بجلی پیدا کرنے کے تمام ذرائع پر کام کیا جارہا ہے ۔ بلوکی پاور پلانٹ سے 225 میگاواٹ بجلی سسٹم میں آجائے گی ۔یہ منصوبہ دسمبر 2009ء میں شروع کیا گیا تھا جسے ریکارڈ وقت میں مکمل کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے ایک سال کے دوران بجلی کی پیداوار میں 900 میگا واٹ کا اضافہ کیا۔ اگلے دو ماہ کے دوران مزید 800 میگا واٹ بجلی نیشنل گرڈ میں آجائے گی جبکہ رواں سال کے آخر تک 600 میگا واٹ کا مزید اضافہ ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی مشاورت سے شروع کئے جانے والے بچت کے پروگرام کے بھی خاطر خواہ نتائج حاصل ہورہے ہیں۔ حکومت ملک کو روشن اور صاف و شفاف بنانے کے عزم پر گامزن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزارت پانی و بجلی ملک بھر میں 32 چھوٹے ڈیم تعمیر کرے گی جس کے بعد بجلی کا بحران ختم ہوجائیگا ۔ صدر آصف علی زرداری کے حالیہ دورہ چین کے دوران 1100 میگا واٹ کے کوہالہ ہائیڈل پاور پراجیکٹ کے معاہدے پر دستخط ہوچکے ہیں جبکہ نیلم جہلم پاور پراجیکٹ تکمیل کے مراحل میں داخل ہوچکا ہے اس سے 969 میگا واٹ بجلی حاصل ہوگی۔ حکومت بجلی پیدا کرنے اور بحران کے خاتمے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لارہی ہے ۔

17/07/2010 18:57:30 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے