اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

بجلی کا شارٹ فال ڈھائی ہزار میگاواٹ سے بڑھ گیا:
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔19مئی۔2010ء)ملک میں بجلی کا شارٹ فال ڈھائی ہزار میگاواٹ سے تجاوز کرگیا ہے جس کے نتیجے میں بڑے شہروں میں چھ سے آٹھ اور چھوٹے شہروں اور دیہات میں دس سے بارہ گھنٹے بجلی کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔لوڈشیڈنگ میں اضافہ سے شہریوں کی مشکلات بڑھ گئی ہیں۔ حیدرآباد میں تاجروں نے رات آٹھ بجے دکانیں بند کرنے کے حکومتی احکامات ماننے سے انکار کردیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ بجلی نہ ہونے سے ان کا کاروبار ویسے ہی ٹھپ ہوچکا ہے۔دوسری جانب کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ صوبے میں بجلی کا شارٹ فال ساڑھے پانچ سو سے بڑھ کر چھ سو تک پہنچ گیا ہے۔ آٹھ سے دس گھنٹے کی لوڈشیڈنگ سے شہری علاقوں میں پانی کی قلت پیدا ہورہی ہے جبکہ نواحی اضلاع میں بیس بیس گھنٹے کی لوڈشیڈنگ سے ٹیوب ویل بند ہوگئے ہیں جس سے فصلیں اور باغات خشک ہونے کا خدشہ ہے۔ بلوچستان میں چھتر کے قریب بجلی کے ٹاورز کی مرمت کے باوجود بھی لوڈشیڈنگ کے دوانیہ میں کمی نہیں آسکی۔

19/05/2010 12:00:07 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے