اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

پشاورسمیت صوبہ بھر میں بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کاسلسلہ مزید تیز ہوگیا:
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین ۔18اپریل ۔2010ء)پشاورسمیت صوبہ بھر میں بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کاسلسلہ مزید تیز ہوگیا ہے لوڈشیڈنگ کادوراینہ اٹھارہ گھنٹے سے بھی تجاوز کرگیا ہے ۔گزشتہ رات آٹھ بجے سے صبح تک شہر بھر میں بجلی بندرہی جس کے باعث شہری بلبلا اٹھے۔ملک بھر کی طرح پشاورسمیت صوبہ بھر میں بجلی کی غیراعلانیہ ظالمانہ لوڈشیڈنگ کاسلسلہ مزید تیز ہوگیا ہے ۔اتوار کی پوری رات پشاورشہر،صدر،نوتھیہ ،گلبرگ سمیت اوردیگرعلاقوں میں بجلی بند رہی جس کے باعث لوگوں کوشدید مشکلات کاسامنا کرنا پڑرہا ہے ۔غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کے باعث کاروبارزندگی مفلوج ہوکر رہ گئی ہے صوبے میں بیشترصنعتیں بند ہوگئی ہے اگر یہی صورتحال رہی توباقی صنتعیں بھی بہت جلدبند ہوجائیگی۔لوڈشیڈنگ کے باعث گھروں اورمسجدوں میں پانی ناپید ہوگئی جبکہ طلباء کاقیمتی وقت بھی ضائع ہورہا ہے کیونکہ دن رات کے مختلف اوقات میں اٹھارہ سے بھی زیادہ بجلی بند کی جاتی ہے ۔شہریوں نے اس غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ پر شدید غم وغصے کااظہارکرتے مختلف علاقوں میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے ۔مظاہرین نے حکومت اورواپڈا کے خلاف شدید نعرہ بازی کی اورمطالبہ کیا کہ اس غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کاخاتمہ کیا جائے ورنہ پرتشدد مظاہروں کاسلسلہ شروع کیاجائیگا۔پشاورکے علاوہ صوبے کے دیگراضلاع مردان ،صوابی ،چارسدہ ،نوشہر ہ ،کاٹلنگ سمیت دیگر علاقوں میں بھی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کاسلسلہ بدستوری جاری ہے۔

18/04/2010 16:14:10 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے