اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

بنوں میں بجلی کی مسلسل 18گھنٹے طویل ترین بریک ڈاؤن،ضلع بھر میں ہو کا عالم:
بنوں(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین ۔ 17جنوری۔2010ء)بنوں میں بجلی کی مسلسل 18گھنٹے طویل ترین بریک ڈاؤن،ضلع بھر میں ہو کا عالم،صنعتی و کاروباری زندگی سمیت دیگر تمام شعبہ جات بری طرح متاثر،شہر کربلا کا منظر اور پتھر کے زمانہ کی تصویر پیش کرنے لگا،عوام کی لو ڈ شیڈنگ شیڈول جاری کرنے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق ضلع بنوں میں علی الصبح5بجے سے رات 11بجے بجے تک مسلسل 18گھنٹے طویل ترین بجلی کی لوڈ شیڈنگ کرائی گئی جس کی وجہ سے کاروبارو صنعتی زندگی شدید متاثر ہوئی ہسپتالوں میں موجود مریضوں ان کے لواحقین اور آپریشن تھیٹر میں آپریشن کرنے والوں کو صبح سے لیکر آدھی رات تک بجلی دیکھنے کے لئے آنکھیں ترس گئی دوسری جانب گھروں میں پینے کے پانی اور مساجد میں وضوں کے لئے پانی موجود نہ تھا جس کی وجہ سے شہر کربلا کا منظر پیش کرنے لگا اور یہ معلوم ہونے لگا کہ بنوں کسی پتھر کے زمانے کی ایک بستی ہے عوامی مفادات کونسل کے تا حیات چیئرمین اور انجمن ترقی پسند گروپ کے صدر ملک دمساز خان نے کمشنر بنوں سردار عباس خان، ڈی سی او کامران زیب خان، سٹیشن کمانڈر بنوں بریگیڈیئر راجہ نصیر احمد،ڈی آئی جی بنوں مسعود خان آفریدی اور ایس ایس پی (ڈی پی او) اقبال خان مروت سے پر زور استدعا کی کہ وہ واپڈا اہلکاروں کو خصوصی اجلاس میں بلائیں اور ان سے لوڈ شیڈنگ شیڈول جاری کروائیں اور شیڈولڈ شدہ اوقات کار پر لوڈ شیڈنگ کرانے پر انہیں سختی سے پابند کریں۔

17/01/2010 12:56:17 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے