اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

ضلع بنوں میں مسلسل 17 گھنٹے لوڈ شیڈنگ، عوام کی واپڈا کو بد دعائیں:
بنوں( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔18اگست ۔2009ء)ضلع بنوں میں مسلسل 17گھنٹوں کی لوڈ شیڈنگ،عوام کی واپڈا کو بد دعائیں،موسم کی بہتری اٹلس پاور بجلی گھر کی تکمیل پرلوڈ شیڈنگ میں مزید اضافہ، شاید اس سال رمضان کے روزے بھی نہ رکھ پائیں، اہلیان بنوں کاائمہ مساجد سے خصوصی بد دعاؤں کی اپیل۔ تفصیلات کے مطابق یوں تو ضلع بنوں میں گرمیوں میں 16سے 20گھنٹوں تک لوڈ شیڈنگ معمول بن چکا ہے اور اسلام آباد آر سی سی /این پی سی سی سے بجلی بند ہے کا کہہ کر واپڈا پیسکو بنوں والے اپنی جان چھڑا جاتے ہیں لیکن گزشتہ دوروز سے جاری مسلسل 17گھنٹوں کی لوڈ شیڈنگ نے عوام کاستیاناس کر دیا ہے سخت دھوپ میں گھروں سے عوام باہر نکل آئے ان کا کہنا تھا کہ نہ دن کو واپڈا والوں سے کاروبار کیا جاتا ہے اور نہ رات کو چین کی نیند سو سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ ڈھائی مہینوں سے جاری کرفیو نے پہلے ہی کاروبار زندگی پر نہایت منفی اثرات ڈالے ہیں لوگ فاقوں پر مجبور ہو گئے ہیں اوپر سے ظالمانہ لوڈ شیڈنگ اور اوور لوڈ شیڈنگ نے دن میں تارے دکھلا دئے ہیں انہوں نے کہا کہ جب جب کرفیو میں نرمی کا دورانیہ بڑھایا جا تا ہے تب تب لوڈ شیڈنگ میں مزید اضافہ ہوتا جاتا رہتا ہے ان کا کہنا تھا کہ 15اگست کو جب وزیر اعظم پاکستان نے اٹلس پاور پلانٹ کا افتتاح کیا اسی دن سے لوڈ شیڈنگ میں کمی کی بجائے اضافہ ہو گیا جبکہ پچھلے دو روز سے بارشوں کی وجہ سے بھی ماحول میں کچھ ٹھنڈک پیدا ہو گیا ہے جبکہ لوڈ شیڈنگ ہے کہ بڑھتا ہی چلا جا رہا ہے عوام کا کہنا تھا کہ شاید اس سال ہم رمضان المبارک کے روزے بھی ٹھیک طرح سے نہ رکھ پائیں انہوں نے کہا کہ یہ واپڈا کی فرعونیت ہے اس کی وجہ سے ہمیں رمضان میں مذہبی عبادات میں سخت خلل پیدا ہونے کا خدشہ ہے اہلیان بنوں نے ائمہ مساجد اور علماء کرام سے پر زور اپیل کی کہ وہ مساجد میں واپڈا والوں کے لئے خصوصی بد دعائیں دیں تاکہ ان کے ظلم اور فرعونیت سے ہم بچ سکیں۔

18/08/2009 13:58:29 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے