اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

تربیلا ڈیم میں حد گنجائش تک پانی بھر گیا، بجلی کی اضافی پیداوار:
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔21اگست ۔2009ء)ملک کے سب سے بڑے آبی ذخیرے تربیلا ڈیم کی جھیل میں گنجائش ختم ہونے کے بعد ، ڈیم میں آنیوالا تمام پانی دریائے سندھ میں چھوڑا جارہا ہے جبکہ ڈیم کا پاور ہاوٴس صلاحیت سے بھی تقریبا ًسو میگا واٹ زیادہ بجلی پیدا کررہا ہے ۔تربیلا ڈیم کی جھیل میں پانی اپنی حد سطح پندرہ سو پچاس فٹ تک بھر گیا ہے ، ڈیم کی تقریباً سو کلومیٹر طویل جھیل میں نو اعشاریہ چھ ملین ایکڑ فٹ پانی ذخیرہ ہوچکا ہے جبکہ قابل استعمال پانی کی مقدار چھ اعشاریہ سات ملین ایکڑ فٹ ہے ۔ ڈیم کی جھیل میں پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش گیارہ ملین ایکڑ فٹ تھی جو مٹی بھرجانے سے ایک اعشاریہ چار ملین ایکڑ فٹ کم ہوگئی ہے ۔ تربیلا ڈیم میں پانی کی روزانہ آمد تقریبا ًدو لاکھ کیوسک ہے ، جھیل میں گنجائش ختم ہونے بعد ڈیم کے اسپل ویز کھول دیئے گئے اور آنے والا تمام پانی ، دریائے سندھ میں خارج کیا جارہا ہے ، ڈیم کے پاور ہاوٴس میں بجلی پیداوار کی صلاحیت تقریباً پینتیس سو میگا واٹ ہے جبکہ پانی کی بھرپور فراہمی سے بجلی پیدا کرنے والی ٹربائنز ، صلاحیت سے بھی زیادہ چھتیس سو میگاواٹ بجلی پیدا کر رہی ہیں ۔ تربیلا پاور ہاوٴس سے مزید بجلی کی پیداوار کیلئے سات سو ملین ڈالر کی لاگت سے نو سو ساٹھ میگاواٹ پیداوار کی صلاحیت والی مزید دو ٹربائنز کی تنصیب کی جائے گی ، اس کا انجینئرنگ ڈیزائن بنایا جارہا ہے اور توقع ہے کہ ان اضافی ٹربائینز کی تنصیب چار برس میں کر لی جائے گی -

21/08/2009 14:28:11 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے