اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

شمالی وزیرستان میں بدترین لوڈ شیڈنگ ،علاقے کے عوام نے لاؤڈ سپیکروں میں پیر تک بجلی ٹھیک کرنے کی ڈیڈ لائن دے دی:
میرانشاہ (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔17مئی ۔2009ء)شمالی وزیرستان میں بدترین لوڈ شیڈنگ -علاقے کے عوام نے لاؤڈ سپیکروں میں پیر تک بجلی ٹھیک کرنے کی ڈیڈ لائن دے دی- تفصیلات کے مطابق شمالی وزیرستان میں حالیہ دنوں میں بدترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ شروع ہے جس میں بیس بیس گھنٹوں سے زیادہ لوڈ شیڈنگ کی جاتی ہے اور جو بجلی ہوتی ہے وہ انتہائی کم وولٹیج کی سپلائی کی جاتی ہے- واپڈا ذرائع کا کہنا ہے کہ بنوں سے سپلائی مکمل طور پر بند کی جاتی ہے جس پر علاقے کے عوام نے انتظامیہ اور واپڈا حکام کو لاؤڈ سپیکروں پر اعلان کیا کہ پیر تک بجلی ٹھیک کی جائے ورنہ پھر ہم حکومتی اہلکاروں کو علاقے میں جانے کی اجازت نہیں دیں گے جس پر میرانشاہ کے اسسٹنٹ پولیٹیکل آفیسر نے میرانشاہ گرڈ اسٹیشن میں بعض بے قاعدگیوں پر نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ عوام کی اطلاع پر جو بے قاعدگیاں تھیں ان کی انکوائری جاری ہیں تاہم دوسری طرف جو بجلی سپلائی ہوتی ہے انتہائی کم وولٹیج کی وجہ سے بجلی کے قیمتی آلات جل گئے ہیں جس کی وجہ سے علاقے میں ٹیوب ویل اور دوسرے قیمت آلات نے کام چھوڑ دیا ہے- اس کے ساتھ ساتھ علاقے میں ملیریا نے بھی وبائی شکل اختیار کرلی ہے اور علاقے کو مچھروں نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے اور اینٹی ملیریا سپرے بھی نہیں ہے-محکمہ صحت ایجنسی سرجن دفتر کے اہلکار نے بتایا کہ اینٹی ملیریا دوائی محکمہ صحت کی طرف سے نہیں ملی ہے-عوام نے مطالبہ کیا ہے کہ اینٹی ملیریا سپرے اور دوائی وافر مقدار میں وزیرستان بھیجی جائے-

17/05/2009 13:02:55 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے