بند کریں
شاعری عباس تابش

اسی لیے تو اندھیرے بھی کم نہیں ہوتے

-

issi liye tu andhere bhi kaam nahi hote


(202) ووٹ وصول ہوئے