بند کریں
شاعری ابرار حامد

دیے کی لو سے نہ جل جائے تیرگی شب کی

-

diye ki lo se na jall jaye tergi shab ki


(241) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان