بند کریں
شاعری عدیم ہاشمیکٹ ہی گئی جدائی بھی کب یہ ہوا کہ مر گئے

عدیم ہاشمی

adeem hashmi

(156) ووٹ وصول ہوئے