بند کریں
شاعری عادل منصوری

یہ رات کی خاموشی بھی کچھ بول رہی ہے

-

yeh raat ki khamoshi bhi kuch bool rahi hai


(221) ووٹ وصول ہوئے