بند کریں
شاعری افضال نویدیہی تھا عشق یہی عشق کا قرینہ تھا

(134) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان