بند کریں
شاعری احمد حمادکس تسلسل کا ہے استعارہ کہ پھر شام بے چین ہے

(291) ووٹ وصول ہوئے