بند کریں
شاعری احمد رضوان

آتا ہی نہیں ہونے کا یقیں کیا بات کروں

-

Ata hi nahi honay ka yaqeen kia bat karoon


(15) ووٹ وصول ہوئے