بند کریں
شاعری احمد فراز

کچھ ہمیں اس سے

-

Kuch hameen is sey


(219) ووٹ وصول ہوئے