بند کریں
شاعری احمد فرازنہ شب وروز ہی بدلے

(335) ووٹ وصول ہوئے