بند کریں
شاعری احمد فرید

نجانے کون ہوں کب سے ہوں

-

najaanay kaun hoon


(236) ووٹ وصول ہوئے