بند کریں
شاعری احمد فرید

وہ سیل خوش اعتبار اترا نہیں

-

woh seel e khush


(268) ووٹ وصول ہوئے