بند کریں
شاعری اجمل سراج

جو اشک برسا رہے ہیں صاحب

-

jo ashk barsa rahay hain saahab


(28) ووٹ وصول ہوئے