بند کریں
شاعری اکبرحمیدی

دل کی گرہیں کہاں وہ کھولتا ہے

-

dil ki girhain kahan wo kholta hai


(109) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان