بند کریں
شاعری اکبرحمیدیزور و زر کا ہی سلسلہ ہے یہاں

(137) ووٹ وصول ہوئے