بند کریں
شاعری اختر ہوشیارپوری

مری نگاہ کا پیغام بے صدا جو ہوا

-

mere nigah ka pegham besada ju hua


(327) ووٹ وصول ہوئے