بند کریں
شاعری اختررضاسلیمی

خبر نہیں تھی کسی کو کہاں کہاں کوئی ہے

-

khabar nahi thi kissi ko kahan kahan koi hai


(303) ووٹ وصول ہوئے