بند کریں
شاعری علی یاسر

اضطراب آشکار ہے کہ نہیں

-

izteraab Aa Shikar hai


(200) ووٹ وصول ہوئے