بند کریں
شاعری علامہ اقبال

تازہ پھر دانش حاضر نے کیا سحر قدیم

-

Tazza phir danish


(306) ووٹ وصول ہوئے