بند کریں
شاعری امجد اسلام امجداتنے خواب کہاں رکھوں گا

اسی بستی کے آنگن میں

-

Isi basti key aangan


(238) ووٹ وصول ہوئے