بند کریں
شاعری انصرحسن

جب بھی ملا ہے وہ کسی ڈھب سے نہیں ملا

-

jab bhi mila hai wo kissi dhaab se nahi milla


(265) ووٹ وصول ہوئے