بند کریں
شاعری انصرحسن

وطن سے جو بھی ہجرت کر گیا تھا

-

watan se ju bhi hijrat kar giya tha


(339) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان