بند کریں
شاعری عارف شفیقکیسا ماتم کیسا رونا مٹی کا

(166) ووٹ وصول ہوئے