بند کریں
شاعری عارف شفیق

سر اٹھائے ہوئے مقتل کی طرف جائوں‌ گا

-

sar uthay howy maktal ki taraf jaon ga


(259) ووٹ وصول ہوئے