بند کریں
شاعری ارشد شاہین

تحیر اک عجیب سا سواد جاں میں چھا گیا

-

tahyar ik ajeeb sa sawad e jaaN main chaa giya hai


(283) ووٹ وصول ہوئے