بند کریں
شاعری اسداللہ خان غالب

ہر ایک بات پہ کہتے ہو تم کہ تو کیا ہے

-

Har ek baat pey


(409) ووٹ وصول ہوئے