بند کریں
شاعری اصغرگونڈوی

کچھ اس ادا سے آج وہ پہلو نشیں رہے

-

kuch iss adaa se aaj wo pehlu naseen rahe


(431) ووٹ وصول ہوئے