بند کریں
شاعری اشفاق ناصر

کبھی ہوتے مسخر ، اور کبھی تسخیر کر لیتے

-

kabhi hote musakhir or kabhi taskheer kar lete


(346) ووٹ وصول ہوئے