بند کریں
شاعری اشرف جاوید

زرِ خاکِ شہرِ جمال دے ، تری نعت ہو کوئی بات ہو

-

zar e khak shehere jamal dey tere naat hoo koi baat ho


(317) ووٹ وصول ہوئے