بند کریں
شاعری آصف شفیع

دل میں وفا کی ہے طلب لب پہ سوال بھی نہیں

-

dil main wafa ki hai talab


(238) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان