بند کریں
شاعری اسلم انصاری

وہ دشت شب وہ کہیں دور رتجگوں کی دھمک

-

wo dasht e shab


(301) ووٹ وصول ہوئے