بند کریں
شاعری عتیق الرحمن صفی

اس کا بھی غم بہت اب معدوم ہو چکا ہے

-

iss ka bhi ghem buhat abb madoom hoo chuka hai


(273) ووٹ وصول ہوئے