بند کریں
شاعری فیصل ہاشمی

طلسم اسم سے تحلیل ہوتا رہتا ہے

-

talism e ism se tehlil hota rehta hai


(251) ووٹ وصول ہوئے