بند کریں
شاعری فیض احمد فیضاب وہی حرف جنوں سب کی زباں ٹھہری ہے

(254) ووٹ وصول ہوئے