بند کریں
شاعری فیض احمد فیضمتاع لوح و قلم چھن گئی تو کیا غم ہے

(741) ووٹ وصول ہوئے