بند کریں
شاعری فیض احمد فیض

شیشوں کا مسیحا کوئی نہیں

-

sheshoon ka maseeha


(648) ووٹ وصول ہوئے