بند کریں
شاعری فاخرہ بتولچاند نے بادل اوڑھ لیا

تمہارے روپ سے بڑھ کر کہیں جمال نہیں

-

Tumharey roop sey


(233) ووٹ وصول ہوئے