بند کریں
شاعری فاخرہ بتولگڑیا آج بھی اندھی ہے

(174) ووٹ وصول ہوئے