بند کریں
شاعری فرحت عباس شاہ

کیا جانئے وہ دل سے اتر کیوں نہیں جاتا

-

Kia janiye who dil


(286) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان