بند کریں
شاعری فرحت عباس شاہاداس اداستم جو ہوتے تو ہمیں کتنا سہارا ہوتا

(321) ووٹ وصول ہوئے