بند کریں
شاعری فرحت عباس شاہاداس اداس

زباں ہے تو نظر کوئی نہیں ہے

-

Zabban hai to


(268) ووٹ وصول ہوئے