بند کریں
شاعری فرحت زاہد

ہر پل اپنے ہونے سے انکار کریں

-

Har pal apnay honay se inkar karen


(15) ووٹ وصول ہوئے