بند کریں
شاعری فراق گورکھپوریدیوان فراق

تو تھا کہ کوءی تجھ سا تھا

-

Tu tha key koye


(345) ووٹ وصول ہوئے